97

جب فحاشی لائی جاتی ہے تو اس سے جنسی جرائم بڑھتے ہیں

وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ جب فحاشی لائی جاتی ہے تو اس سے جنسی جرائم بڑھتے ہیں، معاشرے میں فحاشی کی وجہ سے فیملی سسٹم ٹوٹتے ہیں، ہمیں ہالی ووڈ کی بجائے اسلامی ڈراموں کو پروموٹ کرنا چاہیے۔ تفصیلات کے مطابق نجی ٹی وی چینل کو دیے گئے انٹرویو میں وزیراعظم عمران خان نے ملک میں بڑھتے ہوئے جنسی زیادتی کے واقعات کے حوالے سے کہا کہ ہم اقتدار میں آئے تو آئی جیز نے بریفنگ میں بتایا تھا کہ ملک میں جنسی جرائم بڑھ رہے ہیں۔
یہ صرف پولیس کا معاملہ نہیں، گند پورے معاشرے میں پھیل چکا ہے، جیل سے رہا ہونے والوں کی کوئی رجسٹریشن نہیں ہوتی، معاشرے میں فحاشی کی وجہ سے فیملی سسٹم ٹوٹتے ہیں، جب فحاشی لائی جاتی ہے تو اس سے جنسی جرائم بڑھتے ہیں، ہمیں ہالی ووڈ کی بجائے اسلامی ڈراموں کو پروموٹ کرنا چاہیے۔
سانحہ موٹروے نے پوری قوم کو ہلا دیا،بچوں کے سامنے جو ہوا اس سے صدمہ پہنچا ہے۔
وزیر اعظم نے کہا کہ جنسی زیادتی کرنے والوں کو سرعام پھانسی دینی چاہیئے، جنسی زیادتی کرنے والوں کوعبرت ناک سزائیں دی جائیں۔ وزیراعظم نے کہا کہ ہم اقتدار میں آئے تو آئی جیز نے بریفنگ میں بتایا تھا کہ ملک میں جنسی جرائم بڑھ رہے ہیں۔وزیر اعظم نے کہا کہ جنسی جرائم میں ملوث مجرموں کیلئے نئے قانون کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ مجھے بتایا گیا ہے سرعام لٹکانے سے متعلق عالمی دباؤ آئے گا، جب اس کے بارے میں گفتگو کی تو کہا گیا کہ یہ عالمی سطح پر قابل قبول نہیں ہوگا۔ بتایا گیا کہ یورپی یونین نے ہمیں جی ایس پی اسٹیٹس دیا ہے وہ متاثر ہوگا تاہم ان مجرموں کی آختہ کاری ہونی چاہیئے، کیمیائی آختہ کاری تاکہ ظلم کے قابل نہ رہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں